باہمی تعاون ایشیائی ممالک کی مشکلات کا واحد حل ہے

ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر ڈاکٹر علی لاریجانی نے کہا
علاقائی مشکلات کے حل کے لئے ایران، شام، روس اور ترکی کے تعاون کو براعظم ایشیا کی اقتصادی اور سیاسی مشکلات اور مسائل کے حل کے لئے رول ماڈل قرار دیا ہے۔
تاریخ شائع کریں : پنجشنبه ۸ آذر ۱۳۹۷ گھنٹہ ۱۹:۱۹
موضوع نمبر: 381665
 
ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر ڈاکٹر علی لاریجانی نے علاقائی مشکلات کے حل کے لئے ایران، شام، روس اور ترکی کے تعاون کو براعظم ایشیا کی اقتصادی اور سیاسی مشکلات اور مسائل کے حل کے لئے رول ماڈل قرار دیا ہے۔

ترکی کے شہر استنبول پہنچنے پر صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے ایران کے اسپیکر ڈاکٹر علی لاریجانی نے کہا ہے کہ ایشیا کا خطہ توانائی، قدرتی وسائل اور افرادی قوت سے مالا مال ہے جن سے بھرپور طریقے سے فائدہ اٹھائے جانے کی ضرورت ہے۔
 انہوں نے کہا کہ ایران نے ایشین پارلیمنٹری اسمبلی کے قیام میں بنیادی کردار ادا کیا ہے اور آج بہت سے ممالک اس کے رکن ہیں اور ان ملکوں کی پارلیمانیں اس میں شامل ہو گئی ہیں۔
 انہوں نے کہا کہ ایران، چین، ترکی، روس، افغانستان اور پاکستان کا بین الپارلیمانی اجلاس عنقریب تہران میں ہو گا جس میں دہشت گردی کے خلاف جنگ، علاقائی بدامنی کے تدارک، منشیات کی اسمگلنگ کی روک تھام اور اقتصادی تعاون کے فروغ کی راہوں کا جائزہ لیا جائے۔
 قابل ذکر ہے کہ ایشین پارلیمینٹری ایسوسی ایشن، اے پی اے کا اجلاس ترکی کے شہر استنبول میں شروع ہو گیا ہے جس میں ایشیا کے تئیس ملکوں کے پارلیمانی اسپیکر شرکت کر رہے ہیں۔
Share/Save/Bookmark