محمد بن سلمان کے حکم پر خاشقجی کو بہیمانہ طور پر قتل کیا گیا

ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان نے واضح الفاظ میں کہہ دیا
ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان نے واضح الفاظ میں کہہ دیا ہے کہ سعودی عرب کے ناقد صحافی جمال خاشقج کے قتل کا حکم سعودی عرب کی اعلی اتھارٹی نے دیا ہے اور سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن سلمان کے حکم پر خاشقجی کو بہیمانہ طور پر قتل کیا گیا۔
تاریخ شائع کریں : شنبه ۱۲ آبان ۱۳۹۷ گھنٹہ ۱۶:۰۶
موضوع نمبر: 374007
 
ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان نے واضح الفاظ میں کہہ دیا ہے کہ سعودی عرب کے ناقد صحافی جمال خاشقج کے قتل کا حکم سعودی عرب کی اعلی اتھارٹی نے دیا ہے اور سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن سلمان کے حکم پر خاشقجی کو بہیمانہ طور پر قتل کیا گیا۔

مہر خبررساں ایجنسی نے الجزیرہ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان نے واضح الفاظ میں کہہ دیا ہے کہ سعودی عرب کے ناقد صحافی جمال خاشقج کے قتل کا حکم سعودی عرب کی اعلی اتھارٹی نے دیا ہے اور سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن سلمان کے حکم  پر خاشقجی کو بہیمانہ طور پر قتل کیا گیا۔

ترک صدر نے کہا کہ ہمیں معلوم ہے کہ خاشقجی کے قتل کا حکم سعودی عرب کے ولیعہد نے دیا ہے جبکہ سعودی عرب کے بادشاہ شاہ سلمان قتل میں ملوث نہیں ہیں۔ اردوغان نے کہا کہ خاشقجی کے قتل کے سلسلے میں سعودی عرب کو متعدد سوالات کے جوابات دینے ہیں۔
Share/Save/Bookmark