عالمی تجارت کی بربادی کا زمہ دار امریکہ ہے

اسلامی جمہوریہ ایران نے اقوام متحدہ میں کہا ہے
اسلامی جمہوریہ ایران نے اقوام متحدہ میں کہا ہے کہ امریکی پابندیوں کی وجہ سے عالمی تجارت درہم برہم ہوئی ہے۔
تاریخ شائع کریں : جمعه ۱۱ آبان ۱۳۹۷ گھنٹہ ۱۵:۱۶
موضوع نمبر: 373732
 
اسلامی جمہوریہ ایران نے اقوام متحدہ میں کہا ہے کہ امریکی پابندیوں کی وجہ سے عالمی تجارت درہم برہم ہوئی ہے۔

اقوام متحدہ اسلامی جمہوریہ  ایران کے مستقل مندوب غلام علی خوشرو نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کی نشست سے خطاب کرتے ہوئے جس کا عنوان کیوبا کے خلاف امریکی پابندیوں کے خاتمے کی قراردادوں کا جائزہ لینا تھا، کیوبا کے خلاف امریکہ کی غیرقانونی اور یکطرفہ پابندیوں پر کیوبا کی قوم اور حکومت کی حمایت کا اعادہ کیا۔

ایرانی مندوب نے مزید کہا کہ ممالک کا محاصرہ اور عوام پر یکطرفہ پابندیاں لگانا امریکہ کا وطیرہ بن چکا ہے، بدقسمتی سے موجودہ صدی میں امریکی حکمران ماضی سے سبق سیکھنے کے بجائے نہ صرف مشرق وسطی میں مزید بحران پیدا کررہے ہیں بلکہ انہوں نے کیوبا جیسے کئی ممالک کو غیرمنصفانہ پابندیوں کا شکار کیا ہے۔

غلام علی خوشرو نے گزشتہ 40 سال کے دوران ایران پر امریکی پابندیوں کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ کو اپنے مقاصد کے حصول کیلئے پابندیاں عائد کرنے کا نشہ ہوگیا ہے۔

انہوں نے ایران جوہری معاہدے سے امریکہ کی غیرقانونی علیحدگی کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ سلامتی کونسل کی قرارداد 2231 کے تحت ایران کے خلاف تمام پابندیوں کو اٹھا دینا چاہئے تھا مگر بدقمستی سے سلامتی کونسل کا ایک مستقل رکن اور جوہری مذاکرات کے ایک فریق نے نہ صرف اس معاہدے سے علیحدگی اختیار کی بلکہ اس نے غیرقانونی طور پر نئی پابندیاں بھی لگائیں۔

غلام علی خوشرو نے کہا کہ جوہری معاہدے سے نکلنے کے ساتھ امریکہ نے ایران پر نئی پابندیاں لگا کر دنیا پر یہ ثابت کردیا کہ امریکہ کسی بھی طور قابل بھروسہ ملک نہیں ہے۔
Share/Save/Bookmark