نیٹو کی فوجی حکمت عملی افغانستان میں ناکام کا شکار

افغانستان میں نیٹو کے کمانڈر اسکاٹ میلر نے اعتراف کیا ہے
افغانستان کا فوجی راہ حل نہیں ہے اور اب وقت آگیا ہے کہ اس ملک کے مسائل کو سیاسی طریقے سے حل کرنے کی کوشش کی جائے
تاریخ شائع کریں : پنجشنبه ۱۰ آبان ۱۳۹۷ گھنٹہ ۱۷:۳۸
موضوع نمبر: 373567
 
افغانستان میں نیٹو کے کمانڈر اسکاٹ میلر نے اعتراف کیا ہے کہ افغانستان میں فوجی طریقہ ناکام ثابت ہوا ہے۔

کابل سے ہمارے نمائندے کی رپورٹ کے مطابق انھوں نے امریکی ٹی وی، این بی سی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ افغانستان کا فوجی راہ حل نہیں ہے اور اب وقت آگیا ہے کہ اس ملک کے مسائل کو سیاسی طریقے سے حل کرنے کی کوشش کی جائے۔ میلر نے کہا کہ طالبان بھی جنگ جاری رکھ کر کامیاب نہیں ہو سکیں گے۔اس وقت افغانستان میں انّیس ہزار غیر ملکی فوجی تعینات ہیں جن میں سولہ ہزار سے زائد امریکی فوجی شامل ہیں۔بیشتر افغان حکام اور عوام  کا بھی، یہی کہنا ہے کہ افغانستان میں غیر ملکی فوجیوں کی موجودگی کا اب تک کوئی خاطرخواہ نتیجہ برآمد نہیں ہوا ہے جبکہ افغانستان کی بنیادی تنصیبات کو بری طرح نقصان پہنچا ہے اور عام شہریوں کا بہیمانہ قتل عام ہوا ہے۔
Share/Save/Bookmark