ایمنسٹی انٹرنیشنل کا سعودی صحافی کے قتل کی تحقیقات کا مطالبہ

ایمنسٹی انٹرنیشنل کی مشرق وسطی سے متعلق تحقیقاتی امور کی سربراہ لین معلوف نے کہا
ایمنسٹی انٹرنیشنل نے عالمی برادری سے اپیل کی ہے کہ وہ سعودی حکام کے ہاتھوں حکومت مخالفین کی سرکوبی پر خاموش نہ بیٹھے اور ریاض پر سعودی صحافی کے قتل کے راز کا پتہ لگانے کے لئے دباؤ ڈالے۔
تاریخ شائع کریں : سه شنبه ۱۷ مهر ۱۳۹۷ گھنٹہ ۱۳:۵۴
موضوع نمبر: 366533
 
ایمنسٹی انٹرنیشنل نے عالمی برادری سے اپیل کی ہے کہ وہ سعودی حکام کے ہاتھوں حکومت مخالفین کی سرکوبی پر خاموش نہ بیٹھے اور ریاض پر سعودی صحافی کے قتل کے راز کا پتہ لگانے کے لئے دباؤ ڈالے۔

ایمنسٹی انٹرنیشنل کی مشرق وسطی سے متعلق تحقیقاتی امور کی سربراہ لین معلوف نے کہا ہے کہ سعودی صحافی خاشقجی کے قتل کے بارے میں تحقیقات اور ذمہ دار افراد کے خلاف خواہ وہ جس عہدے و مقام پر بھی ہوں، قانونی کارروائی کئے جانے کی ضرورت ہے۔

انھوں نے کہا کہ خاشقجی کا قتل دنیا کے کسی بھی علاقے میں انسانی حقوق کے طرفداروں اور سعودی حکومت کے مخالفین کے لئے خطرے کی ایک گھنٹی ہے۔

جمال خاشقجی، دو اکتوبر کو ترکی کے شہر استنبول میں سعودی قونصل خانے میں داخل ہوئے تھے جس کے بعد سے ان کا کوئی پتہ نہیں تھا اور اتوار کی صبح سویرے استنبول کے ایک علاقے میں ان کی لاش پڑی ملی ہے بنابریں اس قتل کیس کے سلسلے میں مکمل تحقیقات کئے جانے کی ضرورت ہے۔

خاشقجی کا نام سعودی حکومت مخالفین کی اس فہرست میں بھی شامل رہا ہے جو ریاض حکومت کو مطلوب رہے ہیں اور خاشقجی، سعودی حکومت کے انتقامی اقدام سے خائف ہو کر ہی سعودی عرب سے باہر رہائش پذیر تھے۔
Share/Save/Bookmark