نظامِ تعلیم اور نصاب تعلیم کی بہتری ہماری اولین ترجیح ہے

علمائے کرام کے وفد سے بات کرتے ہوئے پاکستان کے وزیرِ اعظم عمران خان کا کہنا تھا
شعبہ تعلیم میں اصلاحات کا بنیادی مقصد تفریق کا خاتمہ اور مدرسے کے بچے کو اوپر لانا ہے، مدارس کو درپیش تمام مسائل باہمی مشاورت سے حل کریں گے۔
تاریخ شائع کریں : پنجشنبه ۱۲ مهر ۱۳۹۷ گھنٹہ ۱۱:۱۶
موضوع نمبر: 364922
 
پاکستان کے وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ مدارس کی خدمات کو نظر انداز کرنا اور ان کو دہشت گردی سے منسوب کرنا ناانصافی ہے۔

علمائے کرام کے وفد سے بات کرتے ہوئے پاکستان کے وزیرِ اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ مدرسوں کی خدمات کو نظر انداز کرنا اور ان کو دہشت گردی سے منسوب کرنا ناانصافی ہے، مدارس کے بچوں کا بھی پورا حق ہے کہ وہ زندگی کے ہر شعبے میں اپنی صلاحیتوں کے مطابق آگے بڑھ سکیں۔

انہوں نے کہا کہ شعبہ تعلیم میں اصلاحات کا بنیادی مقصد تفریق کا خاتمہ اور مدرسے کے بچے کو اوپر لانا ہے، مدارس کو درپیش تمام مسائل باہمی مشاورت سے حل کریں گے۔

عمران خان نے کہا کہ نظامِ تعلیم اور نصاب تعلیم کی بہتری پی ٹی آئی حکومت کی اولین ترجیح ہے، ملک میں تین مختلف نظام تعلیم کی موجودگی قوم کی تقسیم اور مختلف کلچرز کو پروان چڑھانے کا باعث رہی ہے، ایک قوم کی تعمیر کے لئے ضروری ہے کہ بنیادی نظام تعلیم اور نصاب تعلیم میں یکسانیت ہو۔
Share/Save/Bookmark