یمنی فورسز نے گذشتہ ماہ میں 600 سعودی فوجی ہلاک کرڈالے

تسنیم خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق
ستمبر کے مہینے کے دوران یمنی سرکاری فوج اور قبائلی رضاکاروں کی جانب سے سعودی اتحادی افواج کے خلاف جوابی کارروائیاں جاری رہیں جس کے نتیجے میں کم ازکم 600 کرایے کے فوجی ہلاک یا زخمی ہوگئے۔
تاریخ شائع کریں : سه شنبه ۱۰ مهر ۱۳۹۷ گھنٹہ ۱۶:۴۶
موضوع نمبر: 364552
 
یمنی فورسز کی سعودی اتحادی افواج کے خلاف گزشتہ ایک ماہ کی کارروائیوں میں 600 اہلکار ہلاک یا زخمی ہوئے ہیں۔

تسنیم خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق، ستمبر کے مہینے کے دوران یمنی سرکاری فوج اور قبائلی رضاکاروں کی جانب سے سعودی اتحادی افواج کے خلاف جوابی کارروائیاں جاری رہیں جس کے نتیجے میں کم ازکم 600 کرایے کے فوجی ہلاک یا زخمی ہوگئے۔

یمنی ذرائع کا کہنا ہے کہ سرکاری فوج اور قبائلی رضاکار فورسز نے ملک کے مختلف علاقوں اور سعودی سرحدوں کے اندر کئی جوابی کارروائیاں کیں۔

یمنی فوج اور قبائلی رضاکاروں کا کہنا ہے کہ جب تک سعودی عرب یمن پر مسلط کردہ جنگ کو ختم نہیں کرتا تب تک جوابی حملے جاری رہیں گے۔

یمنیوں کا کہنا ہے کہ نام نہاد خادم الحرمین اسرائیل اور امریکا کی خشنودی کے لئے تین سال سے نہتے یمنی مسلمانوں پر بمباری کررہے ہیں۔

دوسری طرف آل سعود کے جنگی جہازوں نے یمن کے مختلف علاقوں پر وحشیانہ بمباری کرکے متعدد نہتے مسلمانوں کو خاک وخون میں غلطاں کردیا۔

سعودی لڑاکا طیاروں نے صوبہ صعدہ کے دیہی علاقوں پر متعدد بار فضائی حملے کرکے کئی رہائشی مکانات کو تباہ کردیا ہے۔

  واضح رہے کہ سعودی عرب نے امریکا اور اسرائیل کی حمایت سے اور اتحادی ملکوں کے ساتھ مل کر چھبیس مارچ دوہزار پندرہ سے یمن پر وحشیانہ جارحیتوں کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے جس میں ہزاروں شہری شہید و زخمی ہوچکے ہیں۔
Share/Save/Bookmark