کشمیر میں سیکورٹی آپریشن کے 6 جوان شہید

ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر میں سیکورٹی آپریشن ہوا
ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر میں سیکورٹی آپریشن کے دوران پانچ مبینہ عسکریت پسندوں کی ہلاکت کے بعد وادی کے جنوبی علاقوں میں پرتشدد مظاہرے ہوئے ہیں۔
تاریخ شائع کریں : شنبه ۲۴ شهريور ۱۳۹۷ گھنٹہ ۲۱:۲۹
موضوع نمبر: 359432
 
ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر میں سیکورٹی آپریشن کے دوران پانچ مبینہ عسکریت پسندوں کی ہلاکت کے بعد وادی کے جنوبی علاقوں میں پرتشدد مظاہرے ہوئے ہیں۔

سری نگر سے ہمارے نمائندے کے مطابق جنوبی کشمیر  کے علاقے چوگام میں سیکورٹی فورس کی کارروائی میں پانچ عسکریت پسندوں کو ہلاک کرنے کا دعوی کیا گیا ہے جن میں حزب المجاہدین کا ایک اہم کمانڈر گلزار احمد بھی شامل ہے۔

ہندوستانی سیکورٹی فورس نے مذکورہ کمانڈر کی ہلاکت کو اپنے لیے بڑی کامیابی قرار دیا ہے۔

دوسری جانب اس واقعے کے خلاف چوگام اور جنوبی کشمیر کے دیگر علاقوں میں پرتشدد مظاہروں کی خبریں موصول ہوئی ہے جن میں ایک کشمیری نوجوان کے جاں بحق اور ایک درجن سے زائد کے زخمی ہونے کی اطلاع ہے۔
آخری اطلاعات آنے تک جنوبی کشمیر کے بیشتر علاقوں میں صورت حال کشیدہ تھی اور مظاہرین اور پولیس کے درمیان جھڑپوں کا سلسلہ جاری تھا۔
حالات پر قابو پانے کے لیے انتظامیہ نے متاثرہ علاقوں میں موبائل فون جبکہ وادی بھر میں ٹرین سروس معطل کر دی۔
 یاد رہے کہ دو روز قبل کشمیر کے اضلاع سوپور، کپواڑہ اور ریاسی میں ہندوستانی فوج کی مبینہ فائرنگ میں آٹھ کشمیری نوجوان جاں بحق ہو گئے تھے۔
Share/Save/Bookmark