صنعا ایئر پورٹ کی مسلسل بندش جنگی جرم ہے

یمن کی اعلی انقلابی کونسل کے سربراہ محمد علی الحوثی نے کہا
یمن کی اعلی انقلابی کونسل کے سربراہ محمد علی الحوثی نے کہا ہے کہ اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے ماہرین کی رپورٹ سے اس بات کی تصدیق ہوتی ہے کہ صنعا ایئر پورٹ کی بندش جنگی جرم ہے۔
تاریخ شائع کریں : شنبه ۱۷ شهريور ۱۳۹۷ گھنٹہ ۱۵:۵۴
موضوع نمبر: 356986
 
یمن کی اعلی انقلابی کونسل کے سربراہ نے صنعا ایئر پورٹ کی مسلسل بندش کو جنگی جرم قرار دیا ہے۔

المیادین ٹیلی ویژن کے مطابق یمن کی اعلی انقلابی کونسل کے سربراہ محمد علی الحوثی نے  کہا ہے کہ اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے ماہرین کی رپورٹ سے اس بات کی تصدیق ہوتی ہے کہ صنعا ایئر پورٹ کی بندش جنگی جرم ہے۔
انہوں نے اقوام متحدہ اور سلامتی کونسل دونوں سے مطالبہ کیا کہ وہ سعودی اتحاد کی جانب سے انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی مذمت کرے۔
یمن کی اعلی انقلابی کونسل کے چیئرمین نے یہ بات زور دے کر کہی کہ عمان کے ہوائی جہازوں کے ذریعے یمنی وفود اور زخمیوں کی منتقلی کی اجازت نہ دینا بھی انسانی حقوق کی کھلی خلاف ورزی کی واضح  مثال ہے۔
قابل ذکر ہے کہ یمن کی عوامی تحریک انصار اللہ کا ایک وفد امن مذاکرات کے شرکت کے لیے عمان ایئر کے ذریعے صنعا سے جنیوا جانا چاہتا تھا تاہم سعودی اتحاد نے ایسا کرنے کی اجازت نہیں دی۔
 سعودی اتحاد کی رخنہ اندازی کی وجہ سے جمعرات کو جنیوا میں ہونے والے امن مذاکرات تاخیر کا شکار ہو گئے۔
Share/Save/Bookmark