چین اپنی سرزمین پر افغان فوجیوں کو تربیت فراہم کرے گا۔

چین میں تعینات افغان سفیر کا کہنا ہے
چین میں تعینات افغان سفیر کا کہنا ہے کہ القاعدہ اور داعش کے خطرے سے نمٹنے کے لیے دونوں ممالک کے مابین فوجی تعاون کے سمجھوتے کے تحت چین اپنی سرزمین پر افغان فوجیوں کو تربیت فراہم کرے گا۔
تاریخ شائع کریں : جمعه ۱۶ شهريور ۱۳۹۷ گھنٹہ ۱۴:۵۹
موضوع نمبر: 356638
 
چین میں تعینات افغان سفیر کا کہنا ہے کہ القاعدہ اور داعش کے خطرے سے نمٹنے کے لیے دونوں ممالک کے مابین فوجی تعاون کے سمجھوتے کے تحت چین اپنی سرزمین پر افغان فوجیوں کو تربیت فراہم کرے گا۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ڈان کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ چین میں تعینات افغان سفیر کا کہنا ہے کہ القاعدہ اور داعش کے خطرے سے نمٹنے کے لیے دونوں ممالک کے مابین فوجی تعاون کے سمجھوتے کے تحت چین اپنی سرزمین پر افغان فوجیوں کو تربیت فراہم کرے گا۔افغان سفیر جانان موسیٰ زئی کا کہنا تھا کہ انہوں نے چین سے افغان سیکیورٹی فورسز کو جنگی ہیلی کاپٹر فراہم کرنے کی بھی درخواست کی ہے۔ واضح رہے کہ گزشتہ ماہ بیجنگ کی جانب سے ان رپورٹس کی تردید سامنے آئی تھی جن میں کہا گیا تھا کہ چینی افواج، جنگ زدہ ہمسایہ ملک افغانستان میں تعینات کی جائیں گی۔

واضح رہے کہ چین اور افغانستان کے درمیان 2016 میں فوجی تعاون کے سلسلے میں ہونے والے مذاکرات کے بعد سے چین نے افغانستان کو براہِ راست فوجی معاونت فراہم کرنے کا فیصلہ کیا تھا، جس میں چھوٹے ہتھیار، ذرائع نقل و حمل اور دیگر سازو سامان شامل ہے۔
Share/Save/Bookmark