مغرب نے عالمی قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے شام پر جارحیت کی

شامی حکومت اور ان کے حامی شام میں دہشتگردوں کو مکمل خاتمے تک اپنی تمام جد و جہد کو جاری رکھیں گے
اس سے پہلے شام میں دہشتگردوں نے دعویٰ کیا تھا کہ 7 اپریل کو دوما کے علاقے میں حکومت کی جانب سے کیمیائی حملہ کیا گیا ہے تاہم دمشق حکومت نے اس مبینہ حملے میں کسی بھی مداخلت کو مسترد کردیا
تاریخ شائع کریں : دوشنبه ۲۷ فروردين ۱۳۹۷ گھنٹہ ۱۷:۰۳
موضوع نمبر: 324989
 
ایران میں تعینات شام کے سفیر نے یہ انکشاف کیا ہے کہ مشرقی غوطہ میں دہشتگردوں اور تکفیریوں کی شرمناک شکست کے بعد مغرب نے عالمی قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے شام پر جارحیت کی.

تہران میں شامی سفارتخانے کے مطابق، 'عدنان محمود' نے مزید کہا کہ شام کے خلاف مغربی جارحیت کی بربریت اور سامراجی اقدامات کی علامت ہے اور یہ عالمی قوانین کے خلاف اور انسانیت سے دور اقدام ہے.

عدنان محمود نے کہا کہ شامی حکومت اور ان کے حامی شام میں دہشتگردوں کو مکمل خاتمے تک اپنی تمام جدوجہد کو جاری رکھیں کے.

یاد رہے کہ امریکہ نے گزشتہ ہفتہ برطانیہ اور فرانس کی مدد سے شام پر حملہ کر دیا. میزائل حملوں کے لیے ڈونلڈ ٹرمپ نے شام کی جانب سے نام نہاد کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کو جواز بنایا.

اس سے پہلے شام میں دہشتگردوں نے دعویٰ کیا تھا کہ 7 اپریل کو دوما کے علاقے میں حکومت کی جانب سے کیمیائی حملہ کیا گیا ہے تاہم دمشق حکومت نے اس مبینہ حملے میں کسی بھی مداخلت کو مسترد کردیا.
Share/Save/Bookmark