کرم ایجنسی میں حملے میں شہداء کی تعداد 5 ہوگئی

فورسز کی جوابی کارروائی میں 10 حملہ آور بھی مارے گئے
قبائلی عمائدین، ایم این اے ساجد طوری، پولیٹیکل ایجنٹ بصیر خان وزیر اور انتظامیہ کے دیگر اہلکار بھی سرحد پر موجود ہیں اور وہاں افغان حکام کے ساتھ لاشوں کی حوالگی کے متعلق بات چیت کا سلسلہ جاری ہے
تاریخ شائع کریں : دوشنبه ۲۷ فروردين ۱۳۹۷ گھنٹہ ۱۵:۱۵
موضوع نمبر: 324938
 
کرم ایجنسی میں پاک افغان سرحد کے قریب افغانستان کی جانب سے حملے میں شہداء کی تعداد 5 ہوگئی ہے، جبکہ 12 اہلکار زخمی ہوگئے ہیں۔

فورسز کی جوابی کارروائی میں 10 حملہ آور بھی مارے گئے ہیں۔ کرم ایجنسی سے منتخب رکن قومی اسمبلی ساجد طوری نے اس حوالے سے بتایا کہ حملے میں فورسز کے 5 اہلکار شہید جبکہ 12 زخمی ہوگئے ہیں۔

دوسری جانب قبائلی عمائدین، ایم این اے ساجد طوری، پولیٹیکل ایجنٹ بصیر خان وزیر اور انتظامیہ کے دیگر اہلکار بھی سرحد پر موجود ہیں اور وہاں افغان حکام کے ساتھ لاشوں کی حوالگی کے متعلق بات چیت کا سلسلہ جاری ہے۔
Share/Save/Bookmark