سعودی عرب اپنے مفادات کی خاطر اسرائیل جیسی غاصب اور جعلی ریاست سے بھی ہاتھ ملانے پر تیار ہے:بہرام قاسمی

تاریخ شائع کریں : شنبه ۱۸ فروردين ۱۳۹۷ گھنٹہ ۰۰:۵۸
موضوع نمبر: 323049
 
ایرانی دفترخارجہ کے ترجمان نے سعودی عرب کی حالیہ پالیسیوں کو افسوسناک المیہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ایک ایسا اسلامی ملک جو بڑے دعوے کرتا ہے وہ اپنے مفادات کی خاطر اسرائیل جیسی غاصب اور جعلی ریاست سے بھی ہاتھ ملانے پر تیار ہے.

بہرام قاسمی نے جمعہ کے روز اپنے ایک بیان میں سعودی عرب کے منفی سوچ رکھنے والے ولیعہد کے امریکی جریدے ٹائم کے ساتھ گفتگو میں ایران مخالف بیانات پر شدید ردعمل کا اظہار کیا.

سعودی ولی عہد نے اس انٹریو میں اسرائیل کو بطور ریاست تسلیم کرتے ہوئے اسلامی جمہوریہ ایران کو سعودی عرب اور ناجائز صہیونی ریاست کا مشترکہ دشمن قرار دیا.

ایرانی ترجمان نے اس پر کہا کہ سعودی ولیعہد کا جارحانہ رویہ ہر حد پار کرچکا ہے اور اس سے سعودی ولیعہد لاعلاج اور اعصابی بیمار بنے گا.

انہوں نے مزید کہا کہ سعودی ولیعہد اپنے خاندان کے افراد کے درمیان سے مزید طاقت حاصل کرنے بالخصوص امریکہ اور صہیونیوں کو خوش کرنے کے لئے کوئی بھی مضحکہ خیز اور شرمناک بات کرنے کے لئے تیار ہے.

بہرام قاسمی نے انتباہ کیا ہے کہ حالیہ برسوں میں اسلامی ممالک میں دہشتگردی اور انتہاپسندی کے فروغ بالخصوص داعش کی تشکیل کا اصل مقصد عالم اسلام میں خلفشار پیدا کرنا، مسئلہ فلسطین کو ختم اور ناجائز صہیونی ریاست کو تحفظ کرنے کے لئے ہے.
Share/Save/Bookmark