ممبئی میں کم از کم 35 ہزار کسانوں کا احتجاج

کسان مہاراشٹر سے گزشتہ پانچ دنوں میں 180 کلومیٹر پیدل مارچ کرکے یہاں پہنچے
قبائلی کاشت کاروں سمیت کسان دستہ نے مکمل قرض معافی اور کسانوں کے آدیواسی زمین کی منتقلی کے مطالبے کے لئے آج ودھان سبھا کا گھیراؤ کرنے کا منصوبہ بنایا ہے
تاریخ شائع کریں : سه شنبه ۲۲ اسفند ۱۳۹۶ گھنٹہ ۱۶:۱۰
موضوع نمبر: 318006
 
بھارتی ریاست مہاراشٹر کے ناسک ضلع سے گزشتہ پانچ دنوں سے 180 کلومیٹر تک پیدل مارچ کرنے کے بعد ممبئی کی راجدھانی شہر میں کم از کم 35 ہزار کسان موجود ہیں، جو حکومت کے خلاف زبردست احتجاج کر رہے ہیں۔

ٹریفک پولیس نے کہا ہے کہ انہوں نے تیاری کی ہے اور شہر میں جام سے بچنے کے لئے ایک ٹریفک ایڈوائزری جاری کر دی ہے۔ احتجاجی مقام پر سیکورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ہیں۔

آل انڈیا کسان سبھا (اے آئی کے ایس) کی قیادت میں قبائلی کاشت کاروں سمیت کسان دستہ نے مکمل قرض معافی اور کسانوں کے آدیواسی زمین کی منتقلی کے مطالبے کے لئے آج ودھان سبھا کا گھیراؤ کرنے کا منصوبہ بنایا ہے، جو برسوں سے التوا میں پڑا ہوا ہے۔ بڑی تعداد میں آدیواسیوں نے تحریک میں شمولیت کی ہے۔ کسانوں کا کہنا ہے کہ یہ زندگی اور موت کا معاملہ ہے۔
Share/Save/Bookmark