پاکستان کے ساتھ تعلقات میں خرابی نہیں چاہتے، امریکا

ہم پاکستان کے ساتھ فوجی تعلقات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں‘۔
امریکا پاکستان کے ساتھ تعلقات ختم کرنے کے بارے میں نہیں سوچ رہا۔
تاریخ شائع کریں : يکشنبه ۱۳ اسفند ۱۳۹۶ گھنٹہ ۱۴:۰۷
موضوع نمبر: 315956
 
امریکا کی جانب سے اسلام آباد کو یقین دہانی کرائی گئی ہے کہ وہ اپنے اہم ساتھی کے ساتھ دو طرفہ تعلقات خراب نہیں کرنا چاہتا کیونکہ افغان حکومت کے طالبان سے مذاکرات کی پیش کش پر اسلام آباد نے اپنی مخلصانہ حمایت کو بڑھایا ہے۔

امریکی اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ کی قائم مقام اسسٹنٹ سیکریٹری برائے جنوبی اور وسطی ایشیا الائس ویلز نے کہا کہ امریکا پاکستان کے ساتھ تعلقات ختم کرنے کے بارے میں نہیں سوچ رہا۔

ساتھ ہی انہوں نے اسلام آباد کو اس بات کی یقین دہانی کرائی کے امریکا افغان مسئلے کے حل کے لیے پاکستان کو اہم سمجھتا ہے۔الائس ویلز نے کہا کہ اگر واشنگٹن پاکستان کے ساتھ اپنے تعلقات خراب کرتا ہے تو ہم اس کے برعکس تمام عسکریت گروپوں کے خاتمے کے لیے پاکستان کی حمایت کریں گے۔

اس سے قبل ایک اعلیٰ امریکی جنرل جوزف ووٹل کی جانب سے بھی یہ تاثر ختم کرنے کی کوشش کی گئی تھی کہ امریکا اور پاکستان ایک تصادم کی راہ پر تھے، انہوں نے کہا تھا کہ ’ ہم پاکستان کے ساتھ فوجی تعلقات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں‘۔
Share/Save/Bookmark