جرمنی میں مسلمانوں پر حملوں میں تشویش ناک اضافہ

مسلمانوں اور مسلم اداروں پر زیادہ تر حملوں میں دائیں بازو کے انتہا پسند ملوث پائے گئ
جرمن وزارت داخلہ کے مطابق گزشتہ سال مسلمانوں اور مسلم اداروں پر 950 حملے ہوئے جن میں 33 افراد زخمی ہوئے، مساجد پر بھی 60 حملے کیے گئے
تاریخ شائع کریں : شنبه ۱۲ اسفند ۱۳۹۶ گھنٹہ ۱۵:۵۴
موضوع نمبر: 315821
 
جرمنی میں غیر مسلم انتہا پسندوں کی جانب سے مسلمانوں پر حملوں میں تشویش ناک اضافہ ہوا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق جرمن وزارت داخلہ نے مسلم مخالف حملوں کا ڈیٹا جمع کرنا شروع کردیا جس سے اس بات کا انکشاف ہوا ہے کہ جرمنی میں مسلمانوں اور مسلم اداروں پر حملوں میں اضافہ ہوگیا ہے۔

جرمن وزارت داخلہ کے مطابق گزشتہ سال مسلمانوں اور مسلم اداروں پر 950 حملے ہوئے جن میں 33 افراد زخمی ہوئے، مساجد پر بھی 60 حملے کیے گئے۔

جرمنی کی مسلم سینٹرل کونسل کے سربراہ ایمان میزیک نے بتایا کہ جرمنی میں مسلمانوں اور مسلم اداروں پر زیادہ تر حملوں میں دائیں بازو کے انتہا پسند ملوث پائے گئے، جبکہ پچھلے چند سال میں ہونے والے حملوں کا ڈیٹا موجود نہیں۔
Share/Save/Bookmark