بحران یمن کا واحد حل مذاکرات

یمن کے آغاز سے ہی ایران فائر بندی کے نفاذ،مذاکرات پر زور دیتا آیا ہے
امریکہ اور برطانیہ، یمن کے خلاف سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے جرائم میں خود کے شریک ہونے پر پردہ ڈالنے میں ناکام رہے ہیں۔
تاریخ شائع کریں : جمعه ۱۱ اسفند ۱۳۹۶ گھنٹہ ۱۴:۱۳
موضوع نمبر: 315534
 
ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے کہا ہے کہ امریکہ اور برطانیہ، یمن کے خلاف سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے جرائم میں خود کے شریک ہونے پر پردہ ڈالنے میں ناکام رہے ہیں۔

ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے اپنے ٹوئٹ میں اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں ایران مخالف قرارداد کی منظوری میں امریکہ و برطانیہ کی ناکامی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے ایک بار پھر تاکید کے ساتھ کہا ہے کہ بحران یمن کا واحد حل مذاکرات اور اس ملک میں ایک وسیع البنیاد حکومت کا قیام ہے۔

انھوں نے کہا کہ امریکہ اور برطانیہ، یمن کے خلاف سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے جرائم میں خود کے شریک ہونے پر پردہ ڈالنے میں ناکام رہے ہیں۔

محمد جواد ظریف نے کہا کہ بحران یمن کے آغاز سے ہی ایران فائر بندی کے نفاذ، امداد رسانی، مذاکرات اور وسیع البنیاد حکومت کی قیام کی ضرورت پر زور دیتا آیا ہے اور وہ اب بھی اپنے اسی موقف پر قائم ہے اس لئے کہ فوجی طریقے اور الزام تراشی سے مسئلے کا حل نہیں نکل سکتا۔
Share/Save/Bookmark