آیت اللہ محسن اراکی

انسانی معاشروں کی سب سے بڑی مشکل ولایت الہی کی پیروی نہ کرنا ہے

اگر انسان خداوند متعال سے عشق و محبت کے مزے سے آشنا ہوجائے تو پھر وہ اس مزے کو دنیا کی کسی بھی دوسری چیز سے عوض نہیں کرے گا
اگر انسان خداوند متعال سے عشق و محبت کے مزے سے آشنا ہوجائے تو پھر وہ اس مزے کو دنیا کی کسی بھی دوسری چیز سے عوض نہیں کرے گا
تاریخ شائع کریں : دوشنبه ۸ آبان ۱۳۹۶ گھنٹہ ۱۲:۵۳
موضوع نمبر: 291021
 
عالمی مجلس تقریب مذاہب اسلامی کے سیکرٹری جنرل نے کہا ہے کہ انسانی معاشروں کی سب سے بڑی مشکل ولایت الہی کی پیروی نہ کرنا ہے۔

تقریب خبر رساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق آیت اللہ اراکی نے قم المقدسہ میں مدرسہ معصومیہ میں اپنے ہفتہ وار درس اخلاق کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اگر انسان خداوند متعال سے عشق و محبت کے مزے سے آشنا ہوجائے تو پھر وہ اس مزے کو دنیا کی کسی بھی دوسری چیز سے عوض نہیں کرے گا۔

عالمی مجلس تقریب مذاہب اسلامی کے سیکرٹری جنرل نے مزید کہا کہ اہل بیت کی محبت خدا کی محبت کا عظیم جلوہ ہیں بلکہ خدا کی محبت تک پہنچنے کا تنہا راستہ بھی اہل بیت کی محبت ہی ہے۔

آیت اللہ اراکی نے کہا کہ حضرت موسی ع نے ۴۰ دنوں تک اللہ کی عبادت کی اور روایات کے مطابق نہ کوئی چیز کھائی نہ ہی کچھ پیا بنا بر ایں انبیائے کرام خاص طور پر پیغمبر اکرام ص اور اہل بیت ع کے اس طرح کے اعمال خدا سے محبت کے بہترین نمونے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ انسان اگر اعلیٰ اہداف تک دسترسی حاصل کرنا چاہتا ہے تو اسے چاہئے کہ اپنی جوانی کے ایام سے ہی آغاز کرے تاکہ جو کچھ وہ جوانی کے ایام میں بوئے اس اپنے بڑھاپے میں کاٹے ۔

آیت اللہ اراکی نے امام صادق ع کی ایک حدیث کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ مومن کی خوبیوں کا صلہ اسے دنیا میں نہیں ملتا کیونکہ اسکی خوبیاں بارگاہ الہی میں پہنچ جاتی ہیں اور عوام کے درمیان موجود نہیں ہوتیں لیکن کافر کی خوبیاں لوگوں کے درمیان ہی رہ جاتی ہیں اور بارگاہ الہی تک نہیں پہنچتیں۔
Share/Save/Bookmark